Bismillahi Tawakkaltu Alallah Dua in Arabic Urdu Taxt

بسم اللہ الرحمن الرحیم۔ “توکلتُ علی اللہ” یہ دعا ایک قوی اور اہم دعا ہے جو اسلامی تعلیمات میں ایمان و توکل کی اہمیت کو بیان کرتی ہے۔ یہ دعا قرآن کریم کی آیت سے لی گئی ہے جو ایمان اور بھروسے کی قوت کو دکھاتی ہے۔

“توکلتُ علی اللہ” کا مطلب ہے کہ میں نے اللہ تعالیٰ پر بھروسہ کیا ہے۔ یہ دعا ہمیں سکھاتی ہے کہ ہمیں اپنے معاملات، مشکلات اور ہر کام کو اللہ تعالیٰ کے حکم و رضا میں چھوڑ دینا چاہئے۔

اس دعا کے تفسیر سے ہمیں یہ سیکھ ملتی ہے کہ ہر مشکل و محنت میں ہمیں صرف اللہ تعالیٰ پر توکل کرنی چاہیے۔ ہمیں یہ یقین کرنا چاہیے کہ اللہ تعالیٰ ہر مسئلے کا حل فراہم کریں گے اور وہ ہمیشہ ہمارے ساتھ ہیں۔

اس دعا کو پڑھ کر ہم اللہ تعالیٰ پر بھروسہ کرتے ہیں کہ وہ ہماری مشکلات کو دور کریں، ہمیں راہ راست پر لے کر چلیں اور ہمارے لئے بہترین حل فراہم کریں۔

یہ دعا ہمیں یاد دلاتی ہے کہ ہمیں اللہ تعالیٰ کی حفاظت اور مدد پر پورا بھروسہ ہونا چاہئے۔ جب ہم اللہ تعالیٰ پر بھروسہ کرتے ہیں تو وہ ہمیں ہر مشکل سے نجات دلاتے ہیں اور ہمارے لئے آسانیاں پیدا کرتے ہیں۔

Bismillahi Tawakkaltu Alallah Dua
Bismillahi Tawakkaltu Alallah Dua

Bismillahi Tawakkaltu Alallah Dua in Arabic

بِسْمِ اللَّهِ تَوَكَّلْتُ عَلَى اللَّهِ لاَ حَوْلَ وَلاَ قُوَّةَ إِلاَّ بِاللَّهِ

Bismillahi Tawakkaltu Alallah Meaning in Urdu

“اللہ کے نام سے، میں اللہ پر بھروسہ کرتا ہوں؛ اللہ کے سوا نہ کوئی طاقت ہے اور نہ کوئی طاقت”

Bismillahi Tawakkaltu Alallah Meaning in English

“In the name of Allah, I trust in Allah; there is no might and no power but in Allah”

Bismillahi Tawakkaltu Alallah Dua Hadith

Narrated Anas ibn Malik:

The Prophet (ﷺ) said: When a man goes out of his house and says: “In the name of Allah, I trust in Allah; there is no might and no power but in Allah,” the following will be said to him at that time: “You are guided, defended and protected.” The devils will go far from him and another devil will say: How can you deal with a man who has been guided, defended, and protected?

Grade: Sahih (Al-Albani)
Reference: Sunan Abi Dawud 5095
In-book reference: Book 43, Hadith 323

انس بن مالک رضی اللہ عنہ روایت کرتے ہیں:

رسول اللہ صلی اللہ علیہ وسلم نے فرمایا: جب آدمی گھر سے نکلتا ہے اور کہتا ہے: اللہ کے نام سے، میں اللہ پر بھروسہ کرتا ہوں۔ اللہ کے سوا نہ کوئی طاقت ہے اور نہ کوئی طاقت،” اس وقت اس سے کہا جائے گا: “تو ہدایت یافتہ، محفوظ اور محفوظ ہے۔” شیاطین اس سے دور ہو جائیں گے اور دوسرا شیطان کہے گا: تم اس آدمی کے ساتھ کیسے سلوک کر سکتے ہو جس کی رہنمائی، حفاظت اور حفاظت کی گئی ہو؟

درجہ: صحیح (الالبانی)
حوالہ: سنن ابی داؤد 5095
کتابی حوالہ: کتاب 43، حدیث 323

Leave a Comment