دشمن سے حفاظت کی دعا | دشمن کے شر سے حفاظت کی دعا

دشمن سے حفاظت کی دعا اور توجہ مخلصانہ دل سے خدا کی طرف، جو ہر مشکل میں مددگار ہے، کی جانب ہوتی ہے۔ جب ہم کسی دشمن سے حفاظت چاہتے ہیں، تو اپنی حفاظت اور محفوظی کے لیے خدا سے مدد چاہتے ہیں۔ دشمن سے حفاظت کی دعا کی تقویت ہماری قوت میں اضافہ کرتی ہے اور ہمیں دشمن کی برائیوں سے بچانے میں مدد فراہم کرتی ہے۔

اللّٰہ تعالیٰ نے ہمیں ایک مختصر اور قوتور دعا عطا کی ہے جو دشمن سے محفوظت فراہم کرنے کے لیے ہے۔ دشمن سے حفاظت کی دعا القرآن الکریم میں موجود ہے جسے ہم ہر جگہ اور ہر حالت میں پڑھ سکتے ہیں۔ “رَبِّ أَعُوذُ بِکَ مِنْ ہَمَزَاتِ الشَّیَاطِینِ وَ أَعُوذُ بِکَ رَبِّ أَنْ یَحْضُرُونِ”۔ (المؤمنون: ۹۷-۹۸)

یہ دعا معنوں میں یہ مانتی ہے کہ “میرے رب! میں تیری پناہ چاہتا ہوں شیطانوں کی وسوسوں سے اور میں تیری پناہ چاہتا ہوں کہ وہ میرے قریب نہ آئیں۔” دشمن سے حفاظت کی دعا کی برائیوں، نفرت اور نیکی کے دشمنوں سے محفوظت فراہم کرتی ہے۔

دشمن سے حفاظت کی دعا ایک روحانی طاقت ہے جو ہمیں دشمن کی برائیوں سے بچانے میں مدد فراہم کرتی ہے۔ یہ ہمیں قوتِ مدافعت عطا کرتی ہے تاکہ ہم اپنے دشمنوں کے بُرے اعمال کے خلاف قائم رہ سکیں۔ اس دعا کی تلاش، انسان کو ایک محکم چٹان بناتی ہے جو مختلف مشکلات اور دشمنوں کی دھمکیوں کے باوجود قائم و قیام ہوتا ہے۔

دشمن سے حفاظت کی دعا کی تاثیر کو یقینی بنانے کے لیے ہمیں مسلمانوں کے زندگی کے مثالوں سے بھرپور واقعات کا حوالہ دینا چاہیے جو اس دعا کی مدد سے دشمنوں کی شرارتوں سے بچے ہیں۔

Table of Contents

حاسدوں اور دشمنوں سے حفاظت کے لیے وظیفہ

حاسدوں اور دشمنوں سے حفاظت کے لیے کچھ دعائیں یا وظائف اسلامی تقاضوں میں شامل ہیں جو انسان کو مختلف مسائل سے محفوظ رکھتے ہیں۔ اس موضوع میں کئی وظائف ہیں جنہیں انجام دینے سے انسان کی حفاظت ممکن ہوتی ہے۔

یہاں کچھ وظائف دی جارہی ہیں جو حاسدوں اور دشمنوں سے حفاظت کے لیے کی جاتی ہیں:

معوذات کی روزانہ قرائت: معوذات جیسے کہ سورہ فلق اور سورہ ناس کو روزانہ کئی مرتبہ پڑھنا ایک موثر طریقہ ہے جو حاسدوں اور دشمنوں کی برائیوں سے حفاظت فراہم کرتا ہے۔

درود شریف کی زیادہ پڑھائی: درود شریف کو زیادہ سے زیادہ پڑھنا اور اللہ تعالیٰ کے نبی صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم کی برکت لینا بھی ایک بہترین طریقہ ہے۔

دعاؤں کی قبولیت کے لیے توسل: دشمن سے حفاظت کی دعا کے لیے اللہ تعالیٰ سے دعا کرنے کے لیے ریاست کریں اور خدا کی بخشش کی توسل کریں۔

قرآن کی تلاوت اور ذکر: قرآن کی روزانہ تلاوت اور ذکر کرنا بھی حاسدوں اور دشمنوں سے حفاظت کے لیے فائدہ مند ثابت ہوتا ہے۔

توبہ اور استغفار: اللہ تعالیٰ سے توبہ اور استغفار کرنا، گناہوں کی معافی مانگنا اور نیک عملوں کا عمل کرنا بھی حفاظت کی راہ میں مدد فراہم کرتا ہے۔

اور ساتھ ساتھ اس وظیفے کا کثرت سے ذکر کیا کریں انشاءاللہ اپ کو ہر شر سے محفوظ رہیں گے

للہُمَّ إِنِّی أَجْعَلُکَ فِی نُحُورِہِمْ وَأَعُوذُ بِکَ مِنْ شُرُورِہِمْ کثرت سے پڑھیں، ان شاء اللہ شر سے حفاظت رہے گی ، ایک حدیث میں کہ اللہ کے رسولﷺ کو جب کسی شخص یا قوم سے خوف ہوتا تو یہ دعا پڑھتے تھے ۔

یہ تمام وظائف اور عملیں ایک مؤمن کو حاسدوں اور دشمنوں کی برائیوں سے حفاظت فراہم کرتی ہیں اور انہیں محفوظ بناتی ہیں۔ انسان کو اپنے عملوں میں نیکی اور پاکیزگی کی پیروی کرنی چاہیے، ساتھ ہی دنیاوی اور دینی معاملات میں بھی دوسروں کے حقوق کا احترام کرنا چاہیے۔

دشمن سے حفاظت کی دعا

2- حدیثِ پاک میں ہے کہ رسول اللہ ﷺ کو جب کسی دشمن کا اندیشہ ہوتا تھا تو  آپ ﷺ  ’’اَللّٰهُمَّ إِنَّا نَجْعَلُكَ فِيْ نُحُوْرِهِ مْ وَنَعُوْذُبِکَ مِنْ شُرُوْرِهِمْ‘‘ پڑھا کرتے تھے۔

یہ دعا دشمن کی برائیوں، حاسدوں کی حسد سے اور کسی بھی شریر کے برابر کرداروں سے محفوظت فراہم کرتی ہے۔ دشمن سے حفاظت کی دعا کو روزانہ کئی مرتبہ پڑھنا چاہیے تاکہ اللہ تعالیٰ کی پناہ میں رہ کر دشمنوں کی شرائیں سے بچا جا سکے۔

اگرچہ دعا اور عبادت کی بہتری اور معانی کو سمجھنا بہت اہم ہے، لیکن انتہائی سرکاری اور روحانی بات ہے کہ کوئی بھی دعا یا عبادت کرتے ہوئے اپنی نیک نیتیں اور دل کی پاکیزگی سے پڑھی جائے تاکہ وہ اصلی طور پر اللہ تعالیٰ کو مانی جائے اور دشمنوں سے حفاظت ملے۔

دشمن کے شر سے حفاظت کی دعا

دشمن کے شر سے حفاظت کیلئے کچھ دعائیں ہیں جو آپ پڑھ سکتے ہیں۔ دشمن سے حفاظت کی دعا آپ کو نیکی، صحت، امن، اور دشمن کے بُرائی سے محفوظ رکھنے کی دعائیں فراہم کرتی ہیں۔

– فجر اور مغرب کی نماز کے بعد بسم اللہ کے ساتھ گیارہ مرتبہ سورۃ قریش پڑھ لیا کریں، اول و آخر درود شریف بھی پڑھ لیں، ان شاء اللہ ہر شریر کے شر سے جان مال کی حفاظت ہو گی۔

دشمن سے حفاظت کی دعا
دشمن سے حفاظت کی دعا

 ’’أَعُوْذُ بِوَجْهِ اللهِ الْعَظِیْمِ الَّذِيْ لَیْسَ شَيْءٌ أَعْظَمَ مِنْهُ وَبِکَلِمَاتِ اللهِ التَّامَّةِ الَّتِيْ لَایُجَاوِزُهُنَّ بَرٌّ وَلَافَاجِرٌ، وَبِأَسْمَآءِ اللهِ الْحُسْنیٰ کُلِّهَا مَاعَلِمْتُ مِنْهَا وَمَالَمْ أَعْلَمْ مِنْ شَرِّ مَا خَلَقَ وَبَرَأَ وَذَرَأَ‘‘.

2-’’أَعُوْذُ بِوَجْهِ اللهِ الْکَرِیْمِ وَبِکَلِمَاتِ اللهِ التَّامَّةِ اللَّاتِيْ لَایُجَاوِزُهُنَّ بَرٌّ وَلَافَاجِرٌ مِنْ شَرِّ مَایَنْزِلُ مِنَ السَّمَآءِ وَمِنْ شَرِّ مَا یَعْرُجُ فِیْهَا، وَشَرِ مَا ذَرَأَ فِي الْأَرْضِ وَشَرِّ مَا یَخْرُجُ مِنْهَا، وَمِنْ فِتَنِ اللَّیْلِ وَالنَّهَارِ وَمِنْ طَوَارِقِ اللَّیْلِ وَالنَّهَارِ إِلَّا طَارِقًا یَطْرُقُ بِخَیْرٍ یَارَحْمٰن‘‘.

اللہ کی مدد اور دشمنوں کے شر سے حفاظت کی دعا

اللہ کی مدد اور دشمنوں کے شر سے حفاظت کی دعا کئی دعائیں قرآن و حدیث میں موجود ہیں جو انسان کو دشمنوں کی برائیوں اور شر سے محفوظ رکھتی ہیں۔ یہاں ایک دعا پیش کی جا رہی ہے جو اللہ کی مدد اور دشمنوں کے شر سے حفاظت کے لیے معروف ہے:

رَبِّ اَعِنِّيْ وَلَا تُعِنْ عَلَيَّ وَانْصُرْنِيْ وَلَا تَنْصُرْ عَلَيَّ ‌وَامْكُرْ ‌لِيْ وَلَا تَمْكُرْ عَلَيَّ وَاهْدِنِيْ وَيَسِّرِ الْهُدٰى لِيْ وَانْصُرْنِيْ عَلٰى مَنْ بَغٰى عَلَيَّ رَبِّ اجْعَلْنِيْ لَكَ شَكَّارًا لَّكَ ذَكَّارًا لَّكَ رَهَّابًا لَّكَ مِطْوَاعًا لَّكَ مُخْبِتًا إِلَيْكَ أَوَّاهًا مُّنِيْبًا رَبِّ تَقَبَّلْ تَوْبَتِيْ وَاغْسِلْ حَوْبَتِيْ وَأَجِبْ دَعْوَتِيْ وَثَبِّتْ حُجَّتِيْ وَسَدِّدْ لِسَانِيْ وَاهْدِ قَلْبِيْ وَاسْلُلْ سَخِيْمَةَ صَدْرِيْ

Leave a Comment