اذان کے بعد کی دعا

اذان کے بعد کی دعا یہاں تک معروف ہے کہ وہ مسلمانوں کے لیے اذان سننے کے بعد پڑھی جاتی ہے۔ اذان ایک اذان دینے والے کی آواز ہے جو کسی مسجد یا اسلامی مقام میں نماز کی دعوت کے لیے بلند کی جاتی ہے۔ اس دعا کا مقصد خدا کی مدد، رحمت، برکت، اور مغفرت کی التجا ہے۔ اس دعا کو اذان کے بعد پڑھ کر شروع کی جاتی ہے تاکہ ایک شخص اپنے دینی فرضوں کی تکمیل اور روزمرہ کی زندگی میں برکت حاصل کر سکے۔

اس دعا کا ابتدائی حصہ “اللَّهُمَّ رَبَّ هَذِهِ الدَّعْوَةِ التَّامَّةِ وَالصَّلَاةِ الْقَائِمَةِ آتِ مُحَمَّدٍ الْوَسِيلَةَ وَالْفَضِيلَةَ وَابْعَثْهُ مَقَامًا مَّحْمُودًا الَّذِي وَعَدْتَهُ” ہے جو کہ عربی میں ہے اور اس کا معنی ہے “اے اللہ! یہ مکمل دعوت اور قائم نماز کے رب الله! محمد صلى الله عليه وسلم کو وسیلہ اور فضیلت عطا کر اور جس کا وعدہ کیا ہے، اسے مقام محمود میں موقع دے۔” یہ دعا خدا سے درخواست کرتی ہے ۔

اذان کے بعد کی دعا میں خدا سے درخواست کی جاتی ہے کہ وہ اپنے رسول محمد صلى الله عليه وسلم کو ایک خاص درجہ عطا فرمائے۔ یہ دعا اسلامی تعلیمات کا حصہ ہے اور مسلمانوں کی روزمرہ کی زندگی میں اہمیت رکھتی ہے۔ یہ ایک طرف خدا کی برکت اور رحمت کی التجا کرتی ہے اور دوسری طرف اسلامی تعلیمات کے اہم پہلوؤں کو یاد دلاتی ہے۔

اذان کے بعد کی دعا
اذان کے بعد کی دعا

اذان کے بعد کی دعا

اَللّٰهُمَّ رَبَّ هٰذِهِ الدَّعْوَةِ التَّامَّةِ، وَالصَّلاَةِ القَائِمَةِ، اٰتِ مُحَمَّدَ نِ الْوَسِيلَةَ وَ الْفَضِيلَةَ، وَابْعَثْهُ مَقَامًا مَّحْمُودَ نِ الَّذِيْ وَعَدْتَّهٗ، اِنَّكَ لَا تُخْلِفُ الْمِیْعَادَـ
اے اللہ! اس پوری پکار کے رب اور قائم ہونے والی نماز کے رب! محمد ﷺ کو وسیلہ عطا فرما (جو جنت کا ایک درجہ ہے)، اور ان کو فضیلت عطا فرما، اور ان کو مقام محمود پر پہنچا جس کا تو نے ان سے وعدہ فرمایا ہے۔ بے شک تو وعدہ خلافی نہیں فرماتا ہے۔
O Allah! The Lord of this whole call and the Lord of established prayer! Grant Muhammad (peace be upon him) Wasila (which is a level of Paradise), and grant him excellence, and make him reach the position of Mahmud that You have promised him. Indeed, he does not break his promise.

Leave a Comment